Welcome to MuftiArbab.com - A Spiritual Page!
مستعمل پانی کا حکم

باسمہ سبحانہ و تعالیٰ
الجواب وباللہ التوفیق: جو پانی ، حدث و ناپاکی کو ختم کرنے کی غرض سے استعمال کیا گیا ہو یا ثواب کی نیت سے دوباروضوکیا گیا ہو جسم پر استعمال کیا گیا ہو وہ پانی مستعمل ہے، پانی عضو سے الگ ہوتے ہی مستعمل ہو جاتا ہے، مستعمل پانی اگر ناپاک ہے تو اس سے کسی صورت میں غسل جائز نہیں، اور اگر مستعمل پانی طاہر (پاک) ہے اور غسل کرنا واجب ہے توپاکی حاصل کرنے کے لئے تو اس پانی کو استعمال نہیں کیا جا سکتا کیوں کہ اس سے طہارت حاصل نہیں ہو سکتی، ہاں غسل ٹھندک کے لئے استعمال کرنے میں مضایقہ نہیں۔
والله تعالي اعلم